ترکی سے ملنے والی سرحد پر يونانی پوليس کی مہاجرين کے خلاف کارروائی ہزاروں تارکینِ وطن کو سرحد پر روک دیا۔

يونان نے ترکی سے ملنے والی اپنی سرحد پر ہزاروں تارکين وطن کو روک ديا ہے۔

ايتھنز حکومت کے اندازوں کے مطابق شمال مغربی شام ميں تازہ کشيدگی کے تناظر ميں سرحد پر قريب چار ہزار تارکين وطن ہفتے کو جمع ہو گئے جن کی کوشش تھی کہ وہ يورپ ميں داخل ہو جائیں۔

تاہم يونانی پوليس نے آنسو گيس کا استعمال کرتے ہوئے تارکين وطن کے مجمے کو منتشر کر ديا۔ يہ پيش رفت ترک صدر رجب طيب ايردوآن کے جمعرات کی رات سامنے آنے والے بيان کے بعد سامنے آئی، جس ميں انہوں نے کہا تھا کہ يورپ جانے والے مہاجرين کو نہيں روکا جائے گا۔ ترکی ميں تين ملين شامی شہريوں نے پناہ لے رکھی ہے۔

جواب دیں

This site is protected by wp-copyrightpro.com