کولمین دنیا کا تیز ترین انسان

امریکی ایتھلیٹ کرسٹیان کولمین ایک سو میٹر کی ریس جیت کر دنیا کے تیز ترین انسان بن گئے ہیں۔ کولمین جس چیمپیئن شپ میں شریک ہیں، اُس میں تاریخ ساز ایتھلیٹ یوسین بولٹ شریک نہیں ہیں۔

ورلڈ ایتھلیٹکس چیمپیئن شپ کا سب سے سنسنی خیز ڈسپلن ایک سو میٹر کی ریس ہوتا ہے۔ اس مقابلے کو جیتنے والا دنیا کا تیز ترین انسان خیال کیا جاتا ہے۔ ہفتہ 28 ستمبر کی شب امریکا کے تیئیس سالہ ایتھلیٹ کرسٹیان کولمین نے طلائی تمغہ جیتنے کے لیے ایک سو میٹر کا فاصلہ تقریباً پونے دس سیکنڈ (9.76) میں طے کیا۔ یہ کسی بھی بڑے ٹورنامنٹ میں کولمین کی پہلی کامیابی ہے۔

گولڈ میڈل جیتنے والے امریکی ایتھلیٹ کے ہم وطن اور ایک سو میٹر ریس کو دو مرتبہ جیتنے والے جسٹن گاٹلِن ہفتے اور اتوار کی درمیانی شب میں ہونے والے مقابلوں میں دوسری پوزیشن پر رہے۔ انہوں نے کولمین سے صفر اعشاریہ تیرہ سیکنڈ (9.89) زیادہ وقت لیا۔

تیسری پوزیشن کینیڈا کے ایتھلیٹ اندرے ڈی گاسے کو ملی۔ وہ دوسری پوزیشن حاصل کرنے والے امریکی ایتھلیٹ سے محض صفر اعشاریہ ایک سیکنڈ پیچھے تھے۔ انہیں کانسی کا تمغہ دیا گیا۔

جواب دیں

This site is protected by wp-copyrightpro.com