یونان سے تعلق رکھنے والی 81 سالہ اناستاسیہ نے گینز بک میں نام لکھا لیا۔

یونان سے تعلق رکھنے والی 81 سالہ اناستاسیہ نے گینز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں اپنا نام لکھوا لیا۔

ذرائع کے مطابق اناستاسیہ  نے سمندر کی لہروں پر چھہ گھنٹے مسلسل بادبانی کشتی چلا کر یہ ریکارڈ قائم کیا اناستاسیہ  نے اپنے سفر کا آغاز کار پاتھوسں نامی جزیرہ سے کیا (جوکہ جزیروں کے سلسلے دودیکانیسو کا دوسرا بڑا جزیرہ ہے) اور مسلسل چھ گھنٹے سمندر کی لہروں کو چیرتے ہوئے پیلوپونیسو پہنچ کر دم لیا اناستاسیہ  کا کہنا ہے کہ اسے سمندر میں اکیلے سفر کرنے کا بہت زیادہ شوق تھا اور ہر وقت وہ اسی کوشش میں رہتی تھی کہ کسی طرح سے ٹائم ملے اور وہ سمندر میں اکیلے سفر کر سکے ۔

اناستاسیہ  نے اپنے متعلق مزید بتاتے ہوئے کہا کہ وہ روزانہ کی بنیاد پر اپنے کام کاج خود سے کرتی ہے جن میں زیتون اکٹھا کرنا اپنے کپڑے وغیرہ دھو نا جانوروں کے لیے چارہ وغیرہ کاٹنا شامل ہیں۔

لیکن اناستاسیا کا کہنا تھا کہ اسے سکون سمندر کی لہروں پر سفر کرکے میسر آتا تھا اور بچپن ہی سے سمندر سے ایک گہرا لگاؤ تھا اناستاسیہ  کی اس کوشش کو گینز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں جگہ مل گئی ۔اس وقت اناستاسیہ  دنیا کی واحد 81 سالہ عورت ہے جس نے بادبانی کشتی پر اتنا لمبا سفر کیا۔

 

جواب دیں

This site is protected by wp-copyrightpro.com