جرمنی سے پناہ گزینوں کو ڈی پورٹ کرنے کی رفتار تیز کرنے پر کڑی تنقید۔

جرمنی میں حزب اختلاف کی جماعتوں نے جرمن گورنمنٹ پر کڑی تنقید کی ہے جس کے بعد گورنمنٹ نے اس قانون کو دوبارہ دیکھنے کی حامی بھر لی ہے جس کے تحت جرمنی میں سیاسی پناہ حاصل کرنے کے لیے درخواستیں دینے والے افراد کو ڈیپورٹ کرنے کا سلسلہ تیز کر دیا گیا تھا۔

ذرائع کے مطابق جرمنی میں جن لوگوں کی سیاسی پناہ کی درخواستیں مسترد ہو جاتی تھیں انہیں جلدی سے جلدی رپورٹ کرنے کی کوشش کی جاتی تھی اب اس تنقید کے بعد اس قانون میں تھوڑی سی نرمی دیکھی جا رہی ہے۔

انسانی حقوق کی تنظیموں کی جانب سے بھی اس قانون کی سخت مخالفت کی گئی ہے اور جرمنی کی حکومت پر زور دیا گیا ہے کہ سیاسی پناہ کے لیے درخواستیں دینے والے پناہ گزینوں کو جرمنی میں رہنے کی اجازت دی جانی چاہیے۔

تاہم اس بارے میں جرمن حکومت کا کہنا ہے کہ ایسے افراد جن کی سیاسی پناہ کی درخواستیں خارج کی جا چکی ہیں جرمن ایسے افراد کو اپنی سرزمین پر رہنے کی اجازت نہیں دے سکتا اور ایسے تمام افراد کو ملک چھوڑ کر چلے جانا چاہیے جنہیں کوئی خاص مسئلہ درپیش نہیں ہے۔

جواب دیں

This site is protected by wp-copyrightpro.com