الیکسس چپراس کے ہیلی کاپٹر کو ترک فائٹر جہازوں نے ہراساں کیا

یونان کے وزیر اعظم الیکسس چپراس کا کہنا ہے کہ جب وہ 25 مارچ کو اگاتھونیسی جا رہا تھا تو ترکی کے فائٹر جہازوں نے اس کے ہیلی کاپٹر کو ہراساں کیا۔

ترکی کے فائٹر جہازوں نے الیکسس چپراس کے جہاز کو اپنا روٹ تبدیل کرنے کے لیے کہا جس کی وجہ سے ہیلی کاپٹر کے پائلٹ کو نچلی پرواز کرنا پڑی۔

کچھ ہی دیر میں یونان کے فائٹر جہاز ایف سکسٹین بھی موقع پر پہنچ گئے اور اس کے بعد ترک جہازوں نے مداخلت کرنا چھوڑ دی یونان کے فائٹر ایف سکسٹین جہازوں نے الیکسس چپراس کے ہیلی کاپٹر کے سفر کو مقررہ روٹ پر چلنے کے لئے کہا اور ہر طرح کی مداخلت کو روکا۔

اس حوالے سے یونان کی وزارت دفاع کا بیان بھی سامنے آیا ہے جس نے اس بات کو کنفرم کیا ہے کہ اس طرح کا ایک ناخوشگوار واقعہ الیکسس چپراس کے ہیلی کاپٹر کو پیش آیا ہے جس کے بعد ایف سکسٹین طیاروں نے مداخلت کرکے ہیلی کاپٹر کے روٹ کو کلیئر کروایا۔

الیکسس چپراس نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ترکی اس طرح کے حربوں سے اپنا پیسہ اور پٹرول ذائع کر رہا ہے جس سے کسی بھی ملک کو کوئی بھی فائدہ نہیں مل سکتا اور یونان اپنی سرحدوں کی حفاظت اچھے طریقے سے کر سکتا ہے۔

دوسری طرف ترکی کے وزارت خارجہ کے مطابق ترکی کے فائٹر جہاز روٹین کی پرواز پر جا رہے تھے جب یونان کی جانب سے اس طرح کے الزامات ترکی پر لگائے گئے۔

جواب دیں

This site is protected by wp-copyrightpro.com