انڈونیشیا میں سونامی: ہلاکتوں کی تعداد 429 ہوگئی، درجنوں تاحال لاپتہ۔

انڈونیشیا میں ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایجنسی کے مطابق انک کراکاٹوا آتش فشاں کے پھٹنے سے آنے والے سونامی میں ہلاکتوں کی تعداد 429 ہوگئی ہے۔

ہفتے کو جزیرہ سماترا اور جاوا پر ساحلی قصبوں سے انتہائی اونچی سمندری لہروں کے ٹکرانے کے باعث درجنوں افراد ہلاک اور سینکڑوں زخمی ہوئے تھے۔

ٰڈیزاسٹر میجنمنٹ ایجنسی کے ترجمان کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق زخمیوں کی تعداد 1459 تک پہنچ چکی ہے جبکہ 150 افراد تاحال لاپتہ ہیں۔ اس کے علاوہ حکام کے مطابق 16000 افراد اب تک بے گھر ہو چکے ہیں۔

آتش فشاں کے قریب سمندر کے آس پاس بسنے والے رہائشیوں کو نئے سونامی کے خطرے کے پیش نظر ساحل سے دور رہنے کے لیے کہا گیا ہے۔

اتوار کو انک کراکاٹوا آتش فشاں میں ایک بار پھر ہلچل کے ساتھ ساتھ راکھ اور دھواں اٹھتا دیکھا گیا تھا۔

جس کے بعد ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایجنسی کے سربراہ سٹوپو پروہ نگورو نے نیوز کانفرنس میں کہا ہے کہ ’محکمہ موسمیات، کلائمیٹالوجی اور جیو فیزیکل ایجنسی کی سفارشات کے تحت لوگوں کو کچھ عرصے کے لیے ساحل سے دور رہنے کے لیے کہا جا رہا ہے۔‘

ایک چارٹر طیارے سے بنائی گئی ویڈیو میں آبنائے سنڈا میں پیش آنے والے اس واقعے کی شدت کو دیکھا جا سکتا ہے۔

جواب دیں

This site is protected by wp-copyrightpro.com